Thursday, September 29, 2011

Sehhat e Alfaaz 6
Anjuman I Islam ka muqabla e diniyat

Anjuman I Islam ka muqabla e diniyat

Anjuman I Islam ka muqabla e diniyat
K M E S Bhiwandi ka jalsa

K M E S Bhiwandi ka jalsa

K M E S Bhiwandi ka jalsa
Jamiat ul Quresh ka jalsa

Jamiat ul Quresh ka jalsa

5 comments:

Rooman Abid said...

sir nice hia,,,,

amin said...

اسلام علیکم :
پہت ہی عمدہ اور خوپصورت۔۔۔۔۔۔۔۔
(دعائیں)

پُر خلوص دعائیں کبھی رائیگاں نہیں جاتیں۔یہ بہاروں کی رت میں خوشبو بن کر، ابرباراں میں بوندوں کی صورت میں ،وقت کے ساغر میں سیپی کے اندر موتیوں کی طرح بلآخر ان تک پہنچ جاتی ہیں جن کے لئے ہمارے دل میں جنم لیتی ہیں۔۔
یہ تحفہ سب سے پیارہ اور انمول ہے مگر وہی پُرخلوص بندے ، دوسروں کو پُر دّعاؤں سے نوازتے ہیں،جو ان سے پیار کرتے ہیں۔کسی بھی رشتے کے تحت تو لوگوں کے پاس بات کرنے کا وقت نہیں ہوتا ،دعائیں دینا تو الگ بات ہے لہذا دعا صرف انہی کے لئے نکلتی ہے،جس سے ذہنی وابستگی ہو -
اللہ حافظ

aminjk12@gmail.com

Dr Rehan Ansari said...

حامد بھائی، آداب و سلام، آپ کی متحرک شخصیت ایک مثال ہے. لاجواب تحریکیں چھیڑ رکھی ہیں آپ نے. اللہ آپ کے حوصلوں کو سلامت رکھے (آمین) ویسے انجمن اسلام کا حالیہ مقابلہ دینیات ہر لحاظ سے قابل قدر رہا. البته ایک بات کھٹکی. تمام شرکا تحریری مقابلہ کو ایک ہی عنوان پر لکھنے کے لئے کہا گیا. یہ اس لئے ٹھیک نہیں تھا کہ نص مضمون میں کوئی ندرت نہیں لا سکتا تھا. صرف زبان الگ الگ استعمال ہو سکتی ہے. یہ کسی طور سے مقابلہ کی صحت کی ضامن نہیں ہے. خیالات میں تنوع لایا ہی نہیں جا سکتا. زاویوں میں بہت زیادہ پھیلاؤ پیدا ہی نہیں کیا جا سکتا. ضروری ہے کہ کئی عنوانات رکھے جائیں. ورنہ صرف جھالردار زبان والا انعام لے جاۓ گا اور سہل اور عام فہم زبان میں دیں کی وسیع خدمت کرنیوالا محروم رہ جاۓ گا. اگر انجمن کے ذمہ داران اسے کل ہیں پیمانے پر کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں تو انہیں میری اس راۓ سے مطلع فرمادیں.گر قبول افتد زہے از و شرف.

Anonymous said...

bhut khoob me bhi is jalse ka hissa ban na chahti thi mgr aa na saki, mgr aapne jalse ki jalkiya dikha di iska shukriya........aise koi bhi program ho hame zaroor yaad kijiye....

syeda nafis bano said...

ALLAH KAREEM AAP KO MAZEED TARAQQI ATA FARMAYE AUR SADIYON SADAI TAK AAP KI URDU SADI ROSHAN RAHE..